National

The federation has directed the provinces regarding educational institutions 3 Give suggestions

Islam Abad (94 news) وفاقی وزارت تعلیم نے تعلیمی ادارے بند کرنے کے حوالے سے صوبوں کو 3 تجاویز ارسال کر دی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان میں کورونا کیسز میں اضافے کا سلسلہ جاری ہے۔آج تعلیمی ادارے بند کرنے یا نہ کرنے سے متعلق اہم فیصلہ بھی لیا جائے گا۔اسی کے پیش نظر کورونا بڑھنے پر تعلیمی اداروں کے لیے تجاویز پہلے ہی صوبوں کو ارسال کر دی ہیں۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاقی وزارت تعلیم نے کورونا بڑھنے پر تعلیمی اداروں کے لیے تجاویز تمام صوبوں کو بھیج دی ہیں۔جس میں پہلی تجویز تعلیمی اداروں کو 24 From november 31 جنوری تک بند کرنے،دوسری تجویز نومبر سے پرائمری سکولز بند کر دئیے جائیں جب کہ تیسری تجویز یہ ہے کہ 2 دسمبر سے مڈل سکولز بند کر دئیے جائیں۔تجاویز میں مزید کہا گیا کہ 15 دسمبر سے ہائر سیکنڈری اسکولز کے بچوں کو اداروں میں آنے سے روک دیا جائے۔
اساتذہ کو اداروں میں بلایا جائے۔آن لائن ایجوکیشن کی تیاری کی جائے۔مقامی طور پر انتظامات کیے جائیں۔ٹیلی اسکول ، ٹیلی ریڈیو سمیت آن لائن ایجوکیشن سسٹم کو لاگو کیا جائے۔وفاقی وزارت تعلیم کی جانب سے تعلیمی سیشن کو 31 مئی تک بڑھانے کی تجویز بھی دی گئی ہے۔میٹرک انٹر میڈیٹ امتحانات جو 2021 میں لیے جائیں۔مزید برآں وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا ہے کہ حکومت پیر کو تمام اکائیوں کے اجلاس میں تجویز پیش کریگی کہ اسکول بند کر دیے جائیں۔
اپنے بیان میں انہوںنے کہاکہ ملک بھر میں کورونا وائرس سے بڑھتی اموات اور کیسز میں اضافے کے پیشِ نظر وفاقی حکومت پیر کو تمام اکائیوں کے اجلاس میں تجویز پیش کریگی کہ 25 نومبر سے اسکول بند کر دیے جائیں۔ شفقت محمود نے کہا کہ تجویز ہے کہ کیمپس کے بجائے گھر پر پڑھائی شروع کی جائے۔انہوں نے کہا کہ اساتذہ اسکول آئیں، بچے آن لائن پڑھیں اور جہاں آن لائن کا بندوبست نہیں وہاں بچے ایک دن اسکول آکر ہوم ورک لے جایا کریں۔خیال رہے کہ محکمہ تعلیم سندھ نے تعلیمی ادارے بند نہ کرنے کی تجویز دینے کے ساتھ ساتھ موسم سرما میں بھی چھٹیاں نہ دینے کی تجویز پیش کی ہے۔

More

Related news

Leave a Reply

Close