بین الاقوامی

امریکا عافیہ صدیقی کو رہا نہیں کرے گا نہ پاکستان شکیل آفریدی کو

لاہور (94 نیوز) معروف صحافی و تجزیہ کار نجم سیٹھی نے امریکہ پاکستان کے درمیان قیدیوں کے تبادلے پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عمران خان یہ بات ضرور کریں گے اور ڈونلڈ ٹرمپ ان کی بات ضرور سنیں گے لیکن سن کر گول کر دیں گے۔ وائٹ ہاؤس میں موجود صحافیوں نے یہ بھی بتایا کہ وزیراعظم عمران خان  نے  ڈاکٹر عافیہصدیقی سے متعلق سوال کو نظرانداز کیا۔ پاکستان میں عوام کا ایک حصہ ہے جو کہتا ہے کہ عافیہ کو ہر صورت میں پاکستان واپس لائیں۔یہ بھی کہا گیا کہ عافیہ صدیقی کو شکیل آفریدی کے بدلے رہا کر دیا جائے۔ نجم سیٹھی نے کہا کہ اس موقع پر عافیہ صدیقی کی رہائی کی کوئی امید نہیں رکھنی چاہئیے اور نہ یہ توقع رکھیں کہ پاکستان شکیل آفریدی کو امریکا کے حوالے کرے گا اور نہ یہ امید رکھیں کہ عافیہ جلد رہا ہو جائے گی۔

یہ صرف اس صورت میں ممکن ہو سکتا ہے کہ اگر پاکستان اور امریکا کے درمیان تعلقات ویسے ہو جائیں جیسے تعلق کی بات امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور وزیراعظمپاکستان عمران خان کر رہے ہیں کہ ہم مستقبل میں ایسے تعلقات بنائیں گے۔اگر ایک دوسرے سے کیے وعدے پورے ہو جائیں تو پھر تعلقات ٹھیک ہو جائیں گے۔ اور اسی دوران ہی قیدیوں کے تبادلہ ممکن ہو سکتا ہے۔لیکن ابھی بہت سارے وعدے ہیں جو وعدہ کیا ہے وہ نبھانا پڑے گا۔اگر ایسا نہ کیا تو پھر امریکا بادشادہ کے پاس بڑے آلات ہیں پاکستان پر دباؤ ڈالنے کے لیے۔ خیال رہے وزیراعظم عمران خان کی جانب سے امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ سے امریکی صدارتی محل وائٹ ہاوس میں ملاقات کے بعد عافیہ صدیقی کی رہائی سے متعلق اہم بیان جاری کیا گیا ہے۔ صحافیوں سے گفتگو کے دوران ایک سوال کے جواب میں وزیراعظم نے واضح کیا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے ڈاکٹر عافیہصدیقی کی رہائی کے معاملے پر بھی بات ہوگی۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان ڈاکٹر عافیہ صدیقی کے معاملے پرامریکا کیساتھ بات کرنے کوتیارہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ ڈاکٹر عافیہ صدیقی کے بدلے شکیل آفریدی کورہاکیاجاسکتاہے۔

مزید

متعلقہ خبریں

جواب دیں

Close