کھیل

مجھے مذہب کی بنیاد پراستعفیٰ دینے پر مجبورکیاگیاتھا

لاہور (94 نیوز) انڈیا کے مستعفی ہاکی صدر محمد مشتاق احمد نے مذہبی بنیادوں پر امتیازی سلوک کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ مجھے استعفیٰ دینے پر مجبور کر دیا گیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق وزارت کھیل کے دباﺅ پر محمد مشتاق احمد کو عہدے کی معیاد پوری کرنے کا موقع نہیں ملا اور 7 جولائی کو استعفیٰ دینے پر مجبور کر دیا گیا تھا۔ وزارت کو لکھے گئے 5 صفحات کے خط میں انہوں نے الزام عائد کیا کہ محمد مشتاق احمد نام ہونے کی وجہ سے انہیں امتیازی سلوک کا نشانہ بنایا گیا جبکہ دیگر کھیلوں کی تنظیموں کے سربراہ ہندو نام راجیو، مہتا اور سدھاش وغیرہ ہونے کی وجہ سے کھل کر اختیارات کے مزے لوٹ رہے ہیں۔

واضح رہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی کے سربراہ نریندرا مودی کے وزیراعظم بننے کے بعد ملک بھر میں مسلمانوں کیساتھ امتیازی سلوک روا رکھے جانے کے کئی واقعات منظرعام پر آ چکے ہیں اور افسوسناک امر یہ ہے کہ اہم عہدوں پر ذمہ داریاں نبھانے والے مسلمان بھی اس سے محفوظ نہیں ہیں۔

مزید

متعلقہ خبریں

جواب دیں

Close