قومی

عمران خان نے اسمبلیاں تحلیل کرنے پر غور شروع کردیا، بڑا دعوٰی سامنے آگیا

لاہور(94 نیوز) وزیراعظم عمران خان اسمبلیاں تحلیل کرنے پر غور کر رہے ہیں، حکومت کی اتحادی جماعتیں اپوزیشن کیساتھ ملک کر ان ہاوس تبدیلی کا سوچ رہی ہیں، اس کوشش کو ناکام بنانے کیلئے عمران خان اسمبلیاں تحلیل کر دیں گے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان اپنی اتحادی جماعتوں کی جانب سے اپوزیشن سے روابط قائم کرنے اور ان ہاوس تبدیلی کی کوششیں کیے جانے کے معاملے سے مکمل طور پر آگاہ ہیں۔وزیراعظم بھی اپنی اتحادی جماعتوں کی کسی بھی قسم کی بلیک میلنگ سے بچنے کیلئے جوابی اقدامات اٹھانے کیلئے تیار ہیں۔ اگر اتحادی جماعتوں نے اپوزیشن کے ساتھ ہاتھ ملا کر ان ہاوس تبدیلی لانے کی کوشش کی، تو عمران خان اسمبلیاں تحلیل کرکے نئے الیکشن کی طرف چلے جائیں گے۔

اس حوالے سے سینئر صحافی اور تجزیہ کار صابر شاکر نے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کی اتحادی جماعتوں کی جانب سے دیے جانے والے بیانات عندیہ دے رہے ہیں کہ یہ جماعتیں اب حکومت کیساتھ ہاتھ کر کے اپوزیشن کے ساتھ ہاتھ ملانے کی تیاریاں کر رہی ہیں۔

اطلاعات بھی ہیں کہ ان ہاوس تبدیلی کیلئے کوششیں کی جا رہی ہیں۔ اپوزیشن جماعتیں حکومت کی اتحادی جماعتوں کو اپنے ساتھ ملا کر ان ہاوس تبدیلی لانے کی کوشش کر رہی ہیں۔ اپوزیشن جماعتوں کا موقف ہے کہ عمران خان کو اقتدار سے ہٹا کر آپس میں مل بانٹ کر کھائیں گے۔ صابر شاکر کا کہنا ہے کہ ایک جانب مسلم لیگ ق والے نواز شریف کی واضح حمایت کرتے ہوئے حکومت سے کہہ رہے ہیں کہ انہیں بیرون ملک جانے دیں۔جبکہ دوسری جانب ایم کیو ایم والے درخواست کرنے کی بجائے حکومت سے مطالبہ کر رہے ہیں کہ نواز شریف کو بیرون ملک جانے کی اجازت دی جائے۔ صابر شاکر کا کہنا ہے کہ حکومت کے اتحادی  وزیراعظم کو بلیک میل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ اتحادی جماعتیں حکومت میں مزید حصہ چاہتے ہیں۔ بصورت دیگر یہ اتحادی جماتیں اپوزیشن کے ساتھ ہاتھ ملا کر ان ہاوس تبدیلی کی کوشش کریں گی۔ جبکہ وزیراعظم عمران خان کو اس تمام صورتحال کا ادراک ہے۔ اس حوالے سے آئندہ چند روز اہم ہوں گے۔

مزید

متعلقہ خبریں

جواب دیں

Close