قومی

رانا ثنا اللہ کاسانحہ ماڈل ٹاؤن پرجے آئی ٹی کے سامنے پیش ہونے سے انکار

لاہور(94نیوز) سابق وزیرقانون پنجاب اور پاکستان مسلم لیگ(ن) کے رہنما رانا ثنا اللہ نے سانحہ ماڈل ٹاون پر بنائی گئی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) کے سامنے پیش نہ ہونے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

رانا ثنا اللہ نے کہا ہے کہ پنجاب حکومت کی جانب سیاسی انتقام لینے کیلئے جے آئی ٹی بنائی گئی ہے۔ موجودہ حکومت نے پاکستان عوامی تحریک (پی اے ٹی) کے کہنے پر جے آئی ٹی بنائی کیونکہ پی اے ٹی ہمارے لیے بغض رکھتی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ سانحہ ماڈل ٹاون میں فرد جرم لگ چکی ہے لہذا جے آئی ٹی کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے۔اس حوالے سے رانا ثنا اللہ کا مزید کہنا تھا کہ جے آئی ٹی میں شامل افسران قابل عزت اور اچھی شہرت کے حامل ہیں۔

 واضح رہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان میں گزشتہ سال 2018 دسمبر میں چیف جسٹس کی سربراہی میں پانچ رکنی لارجر بینچ نے ماڈل ٹاؤن کیس کی سماعت کی تھی جس کے بعد نئی جے آئی ٹی بنانے کا حکم دے دیا گیا تھا۔ نئی جے آئی ٹی نے سابق وزیر قانون کوآج طلب کیا تھا۔
مزید

متعلقہ خبریں

جواب دیں

Close