قومی

بلاول بھٹو کے مارچ میں پیسے دیکر لائی جانے والی خواتین کے متعلق خبر دینے پر صحافی کو قتل کردیا گیا

کراچی (94 نیوز) بلاول بھٹو کے مارچ میں پیسے دیکر لائی جانے والی عورتوں کے متعلق خبر دینے پر صحافی کو قتل کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ میں آزادی صحافت پر کھلم کھلا حملہ کردیا گیا۔ نجی ٹی وی چینل کے رپورٹر عزیز میمن کو مارچ 2019 میں بلاول بھٹو زرداری کے ٹرین مارچ میں پیسے دیکر لائی جانے والی عورتوں کے متعلق خبر دینے پر دھمکیوں کا سامنا تھا، بعد ازاں انہیں قتل کر کے انکی لاش نہر میں پھینک دی گئی۔اس حوالے سے سوشل میڈیا صارفین اور ملک بھر سے صحافی برادری کی جانب سے شدید ردعمل دیکھنے میں آیا۔

سینئر تجزیہ نگار حامد میر نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری اپنے پیغام میں کہا ہے کے ٹی این نیوز کے محراب پور سندھ کے رپورٹر عزیز میمن ہیں مارچ 2019 میں بلاول بھٹو زرداری کے ٹرین مارچ میں پیسے دیکر لائی جانے والی عورتوں کے متعلق سٹوری دینے پر انہیں دھمکیوں کا سامنا تھا، اب انہیں قتل کر کے لاش نہر میں پھینک دی گئی۔

انہوں نے صحافی برادری سے مطالبہ کیا کہ اس ظلم کیخلاف تمام صحافی برادری کو اکٹھا ہوکر حساب لینا ہوگا۔

Hamid Mir

 یہ کے ٹی این نیوز کے محراب پور سندھ کے رپورٹر عزیز میمن ہیں مارچ 2019 میں بلاول بھٹو زرداری کے ٹرین مارچ میں پیسے دیکر لائی جانے والی عورتوں کے متعلق سٹوری دینے پر انہیں دھمکیوں کا سامنا تھا آج انہیں قتل کر کے لاش نہر میں پھینک دی گئی اس ظلم کا صحافی برادری کو حساب لینا ہو گا

View image on Twitter
دوسری جانب پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے محراب پور میں صحافی عزیز میمن کے قتل کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ عزیز میمن کے قتل میں ملوث ملزمان کو قانون کی گرفت اور منطقی انجام تک پہنچایا جائے۔ایک بیان میں بلاول بھٹو زرداری نے کہاکہ عزیز میمن کے لواحقین کے غم میں برابر کا شریک ہوں، ہر مقتول کے ورثاء کا غم میں سمجھ سکتا ہوں۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ صحافیوں کی تحفظ کے معاملے پر کسی مصلحت کا شکار نہیں ہوں گے۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہاکہ میڈیا کی آزادی اور صحافیوں کے تحفظ پر پیپلز پارٹی کا ہمیشہ واضح مؤقف رہا ہے۔
مزید

متعلقہ خبریں

جواب دیں

Close