قومی

شہبازشریف نے لندن کی عدالت میں برطانوی صحافی کیخلاف مقدمہ دائرکر دیا

لندن (94 نیوز) پاکستان مسلم لیگ  ن کے صدر میاں شہبازشریف  نےڈیوڈٖ روز کاچیلنج قبول کرتے  ہوئے برطانوی صحافی اور معروف انگلش اخبار’’ڈیلی میل‘‘ کے خلاف لندن ہائی کورٹ میں مقدمہ دائر کر دیا  ہے، جس کے بعد کوئنز بینچ ڈویژن نے اخبار اور صحافی کو نوٹس جاری کردیے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق لندن میں اپنے وکیل کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے میاں شہباز شریف نے کہا کہ  ڈیوڈ روز کے آرٹیکل میں الزامات جھوٹے اوربے بنیاد تھے، بغیر ثبوت کے الزامات لگانا سیاسی طور پر نقصان پہنچانے کی کوشش تھی۔انہوں  نے کہا کہ برطانوی  اخبار  میں کہانی عمران خان کے کہنے پر چھاپی گئی، میرے خلاف آرٹیکل سیاسی  مقاصد کے لئے لکھا گیا ۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے  شہباز شریف کے وکیل الاسڈئیر پیپر نے کہا کہ رائل کورٹ آف جسٹس میں مقدمہ شروع ہونے میں 9 ماہ سے ایک برس لگ سکتا ہے، اخبار کی طرف سے معقول جواب نہ ملنے پر عدالت سے رجوع کیا۔ انہوں نے کہا کہ صحافی ڈیوڈ روز نے اخبار اور سوشل میڈیا پر شہبازشریف پر خورد بُرد کے بےبنیاد الزامات لگائے اور یہ آرٹیکل سیاسی مقاصد کے لیے شہبازشریف کے خلاف مہم کا حصہ تھا۔انہوں نے کہا کہ   شہبازشریف کو اپنی ساکھ عزیز ہے، وہ ان مضحکہ خیز الزامات سے اپنا نام کلئیر کرائیں گے۔

واضح رہے کہ 14 جولائی 2019 کو برطانوی اخبار ڈیلی میل نے دعویٰ کیا تھا کہ سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کے خاندان نے زلزلہ متاثرین کو ملنے والی برطانوی امداد میں چوری کی۔ رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ پاکستان کو دی گئی امداد میں شہباز دور میں برطانوی امدادی ادارے نے لگ بھگ 50 کروڑ پاؤنڈ پنجاب کو دیے۔ رپورٹ کے مطابق پاکستان کے تحقیقاتی ذرائع کا کہنا ہے کہ ایک جانب عالمی ترقیاتی منصوبوں کے لیے امداد دینے والا برطانوی محکمہ  ڈی ایف آئی ڈی سابق وزیراعلیٰ پنجاب پر امدادی رقم کی بارش کرتا رہا تو دوسری جانب ان کا خاندان عوامی فنڈ کے ملین پاؤنڈز منی لانڈرنگ کے ذریعے برطانیہ منتقل کرتے رہے۔

مزید

متعلقہ خبریں

جواب دیں

Close