قومی

شرجیل میمن کو نیب نے حراست میں لینے کا فیصلہ کرلیا

کراچی (94 نیوز) نیب نے پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنماشرجیل میمن کے خلاف بھی غیر قانونی اثاثے بنانے کی تحقیقات شروع کرنے اور اپنی حراست میں لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق نیب سندھ کے حکام شرجیل میمن کی حراست کی اجازت لینے کے لیے احتساب عدالت پہنچ گئے۔ درخواست میں موقف اپنایا گیا ہے کہ غیر قانونی اثاثوں کی تحقیقات کے لیے شرجیل میمن کو حراست میں لینا ضروری ہے۔

نیب نے گزشتہ دنوں شرجیل میمن کے گھر پر چھاپہ مارا تھا۔ چھاپے کے دوران نیب نے فارم ہاؤس کی تلاشی بھی لی جس کے بعد مختلف دستاویزات اور کچھ اہم ریکارڈ قبضے میں لے لیا گیا تھا۔

نیب کے چھاپے کے دوران رقبے کی پیمائش کا کام بھی کیا گیا۔ ذرائع کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی  رہنما شرجیل میمن نے اپنے اثاثہ جات میں اس فارم ہاؤس کو ظاہر نہیں کیا۔ اس فارم ہاؤس کا انکشاف شرجیل میمن کے گرفتار فرنٹ مین سے کی گئی تفتیش کے دوران ہوا تھا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ نیب کی ٹیم میں چھ سے سات افراد شامل تھے۔خیال رہے کہ رواں ہفتے کا آغاز اپوزیشن پر کافی بھاری رہا ۔پہلے اسلام آباد ہائیکورٹ نے سابق صدر اور پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین آصف علی زرداری کی ضمانت کی درخواست مسترد کی جس کے بعد نیب نے انہیں زرداری ہاؤس سے حراست میں لے لیا ، اور بعد ازاں احتساب عدالت نے انہیں 21 جون تک جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کیا تھا اور آج ان کا مزید جسمانی ریمانڈ بھی منظور ہو گیا ہے۔پاکستان میں رواں ماہ کے دوران ہونے والی گرفتاریوں نے سیاست میں بھی ایک ہلچل مچا دی ہے۔اس حوالے سے سوشل میڈیا پر بھی دلچسپ تبصرے ہورہے ہیں۔ جبکہ مزید گرفتاریوں کا امکان بھی ظاہر کیا جا رہا ہے۔ سیاسی حلقوں میں اس حوالے سے کافی بے چینی بھی پائی جا رہی ہے۔ سینئیر تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ آئندہ کچھ دنوں میں مزید گرفتاریاں ہونے کا بھی امکان ہے ۔

مزید

متعلقہ خبریں

جواب دیں

Close