National

Saad former Chief Justice Nisar terribly charges

Lahore (94 news) مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ سعد رفیق نے الزام عائد کیا ہے کہ ان کے خلاف ہونے والی سازش میں سابق چیف جسٹس ثاقب نثار بھی شامل تھے ۔

ان کا کہنا تھا کہ ان کے خلاف سازش میں بہت سے کرداروں میں ایک کردار ثاقب نثار بھی تھے ،اگر باقی کرداروں کا ذکر کروں گا تو آگ لگ جائے گی ،میں آگ نہیں لگانا چاہتا ۔ان کاکہنا تھا کہ مجھے عمران خان کے خلاف ساڑھے پانچ سو ووٹوں سے ہرایا گیا ،ووٹوں کی دوبارہ گنتی کی درخواست پر ثاقب نثار نے پہلی ہی پیشی کے پہلے چار منٹ میں درخواست سائیڈ پر پھینک دی ۔انہوں نے کہا کہ مجھے اس وقت پکڑا گیا جب میں صوبائی نشست پر ضمنی انتخابات لڑنے کی تیاری کر رہا تھا ،نیب کے پاس میرے خلاف کوئی ثبوت نہیں تھے ،نیب کو اپنی مالی معاملات کے دستاویزات میں نے خود پیش کیے اور بتا یاکہ میں ٹیکس بھی دے رہا ہوں اور انتخابی گوشواروں میں بھی جائیداد شامل ہیں ۔

انہوں نے یہ گفتگو جیو کے ایک پروگرام میں انٹرویو دیتے ہوئے کہی۔

More

Related news

Leave a Reply

Close