international

United Kingdom was the European Union, British flags were hoisted on buildings

London(94 news) برطانیہ 47 سال بعد یورپی یونین سے الگ ہوگیا جس پر برطانیہ میں اہم عمارتوں پر برطانوی پرچم لہرا دئیے گئے۔

برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن کی رہائش گاہ کے سامنے بریگزٹ کے حامی اور مخالفین آمنے سامنے آ گئے، ممکنہ تصادم روکنے کے لیے سیکورٹی اہل کار موقع پر پہنچے گئے۔ برطانوی وزیراعظم کی رہائش گاہ پر روشن کی گئی گھڑی نے یونین سے علیحدگی کا اعلان کیا۔ بیلجیم میں برطانوی سفارتخانے سے یورپی یونین کا پرچم اتار دیا جبکہ برسلز سے یونین جیک بھی ہٹادیا گیا۔

بریگزٹ پر عمل سے کچھ گھنٹے پہلے برطانوی کابینہ کا علامتی اجلاس ہوا جس کے بعد جاری بیان میں وزیراعظم بورس جانسن نے کہا ہے کہ بریگزٹ انکی زندگی کی سب سے بڑی خوشی ہے، تاہم انہوں نےصحافی کی جانب سے پوچھے گئے ملک کو دوٹکڑے کرنے کے سوال کا جواب نہیں دیا۔

Britain's opposition Jeremy Corbin said not brygzt Day celebration, a day of reflection, he has also clearly expressed their concerns regarding the future of Lord Tariq Ahmed said in an exclusive interview with deputing News separation of the turning point in the history of the EU, the countries will boost cooperation in trade, culture and other fields to leave the EU.

The British Member of Parliament Afzal Khan not ready separation from the European Union said that talking to Geo News, a half 3 Year was very difficult, now want, uncertainty over the situation has improved in the United Kingdom, there is a lot of work in less time.

Meanwhile, US Secretary Mike Pompey said while expressing pleasure that the United Kingdom and the European Union in accordance with the aspirations of the British people agreed brygzt, brygzt deal, will continue aurtamyry strong ties with Britain.

More

Related news

Leave a Reply

Close