قومی

اللہ کا کرم ہے کہ روپیہ کی قدر 35 فیصد گری،ڈالر300 یا 250 تک چلا جاتا، عمران خان

لاہور(94نیوز) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ڈالر آج 155کا ہے ، یہ300 کا بھی جاسکتا تھا، للہ کا کرم ہے کہ روپیہ کی قدر 35 فیصد گری ورنہ ڈالر300 یا 250 تک چلا جاتا، حکومت میں آئے تو 19 ارب ڈالر کا خسارہ تھا، کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ختم ہوگیا، ہم نے اپنا بجٹ بیلنس کردیا ہے۔

انہوں نے آج میانوالی میں مدراینڈ چائلڈ ہسپتال کا سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مدر اینڈ چائلڈ ہسپتال کا سنگ بنیاد رکھنے پر خوشی ہے۔میانوالی کے قریب جدید ہسپتال تعمیر کرنے جارہے ہیں۔ جدیدہسپتال کی تعمیرسے یہاں کے لوگوں کوعلاج کیلئے کہیں اورنہیں جانا پڑے گا۔ انہوں نے کہا کہ میں نے 23 سال پہلے میانوالی سے سیاست شروع کی۔ میانوالی میرے ساتھ تب کھڑا ہوا جب پورے ملک میں مجھے کسی نے ووٹ نہیں دیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ عوام کوعلاج معالجے کے سلسلے میں سب سے زیادہ مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

پسماندہ علاقوں کے عوام کو صحت اور آبی مشکلات کا سامنا ہے۔ نوجوانوں کو بہترین روزگار دینے کیلئے انہیں ہنر سے آراستہ کرنا ہوگا۔ اعلیٰ تعلیم کے جتنے ادارے ہوں گے ملک اتنا ہی ترقی کریگا۔ عمران خان نے کہا کہ بلدیاتی نظام ایسا لارہے ہیں جس کے اثرات نچلی سطح پر جائیں گے۔ ڈالر آج 155کا ہے ،یہ300 کا بھی جاسکتا تھا، اللہ کا کرم ہے کہ روپیہ کی قدر 35فیصد گری ورنہ ڈالر300 یا250 تک چلا جاتا، حکومت میں آئے تو19ارب ڈالر کا خسارہ تھا، کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ختم ہوگیا،ہم نے اپنا بجٹ بیلنس کردیا ہے۔4سال میں بار کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ختم ہوگیا ہے۔اگر ہمیں سابق حکومتوں کے قرضوں پر سود نہ دینا پڑتا تو ہم سرپلس ہوتے۔عمران خان نے کہا کہ ماضی میں باہر سے تیل اور ایل این جی مہنگی خریدی گئی۔ن لیگ کی حکومت گیس میں 154ارب کا خسارہ چھوڑ کرگئی۔

مزید

متعلقہ خبریں

جواب دیں

Close