National

Rangers, FC and police deployed at Islamabad, Faizabad Interchange

Islam Abad(94 news) اسلام آباد میں تحریک لبیک کے احتجاج کے نتیجے میں فیض آباد انٹرچینج پر رینجرز، ایف سی اور پولیس کی بھاری نفری تعینات، انتظامیہ نے مری روڈ کو کنٹینرز لگا کر بند کر دیا جبکہ فیض آباد اور گرد و نواح میں موبائل سروس بھی معطل کر دی گئی ہے۔

احتجاج کے پیش نظر فیض آباد اور اطراف میں موبائل انٹرنیٹ سروس معطل ہونے کے نتیجے میں صارفین کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، آن لائن کلاسز لینے والے طلبا و طالبات، اساتذہ، امتحانات دینے اور کلاس لینے والے طلبہ کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ انتظامیہ کی جانب سے مری روڈ کو کنٹینر لگا کر مکمل بند کر دیا گیا ہے جبکہ پبلک ٹرانسپورٹ بند ہونے سے شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

دوسری جانب اسلام آباد میں ٹریفک کی خراب صورتحال کے سبب اسلام آباد ٹریفک پولیس کی جانب سے ڈھوکری چوک، بھارہ کہو، کشمیر چوک، ترنول، روات ٹی کراس، فیض آباد اور آئی جے پی روڈ کے لیے متبادل ٹریفک پلان جاری کر دیا گیا ہے۔

اسلام آباد ٹریفک پولیس کی جانب سے جاری کیے گئے متبادل پلان میں کہا گیا ہے کہ مری سے اسلام آباد کے لیے شاہ پور ویلیج سے سملی ڈیم روڈ، پھر پرنس روڈ استعمال کریں، مری جانے والے مسافر حضرت پارک روڈ سے بنی گالہ کا راستہ اپنائیں۔

ٹریفک پولیس کے مطابق روات ٹی کراس جانے کے لیے پشاور روڈ استعمال کریں جبکہ ترنول جانے کے لیے موٹروے اور آئی جے پی جانے کے لیے نائنتھ ایونیو کا استعمال کریں۔

ٹریفک پولیس اسلام آباد کا کہنا ہے کہ راول ڈیم روڈ، ترامڑی چوک، فیصل ایونیو،ایکسپریس وے، مارگلہ روڈ، جناح ایونیو، سرینگر ہائی وے، اتاترک ایونیو، کانسٹیٹیوشن ایونیو، الیونتھ، ٹینتھ، نائینتھ اور سیون ایونیو پر بھی ٹریفک معمول کے مطابق رواں دواں ہے۔

ادھر فیصل آباد میں بھی احتجاج کا سلسلہ جاری ہے۔ رات گئے تک جامعہ چشتیہ چوک میں کارکنوں نے راستہ بلاک کیا ہواتھا۔ آج صبح ہی کارکن چوک گھنٹہ گھر میں نکل آئے۔

More

Related news

Leave a Reply

Close