National

Members of Parliament exempted from paying toll tax

160روپے سے ٹیکس شروع ہو کر 1ہزار سے اوپر ہو چکا، غریب آدمی کا موٹرو ے پر سفر کرنا محال ہو چکا ہے، کامل علی آغا

Islam Abad (94 news) اراکین پارلیمنٹ کو ٹول ٹیکس ادائیگی سے مستثنٰی قرار دے دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور اور اسلام آباد موٹروے پر سفر کرنے والے پارلیمنٹرینز کی گاڑیوں پر اب ٹول ٹیکس لاگو نہیں ہوگا بلکہ وہ اپنا تعارف کروا کے موٹروے پر بنا ٹیکس ادائیگی کے سفر کر سکیں گے۔
اس حوالے سے نیشنل ہائی وے کونسل کے مطابق اراکین پارلیمنٹ کو ٹول ٹیکس سے استشنیٰ کی منظوری دے دی گئی ہے جس کا باقاعدہ نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا گیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ اس سے قبل ایم 2 پر پارلیمنٹرینز پر ٹیکس چھوٹ کو ختم کر دیا گیاتھا۔ تحریک انصاف کی سابقہ حکوت میں اراکین پارلیمنٹ کو دی گئی چھوٹ کو ختم کرتے ہوئے کہا گیا تھا کہ پارلیمنٹرینز کو بھی عام عوام کی طرح ٹول پلازے سے گزرنے پر مقررہ فیس ادا کرنا ہو گا۔

واضح رہے کہ ایک ہفتہ قبل ہونے والے سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے مواصلات کے اجلاس میں اراکین پارلیمنٹ نے ٹول ٹیکس کے حوالے سے تحفظات کا اظہار کیا تھا۔ اجلاس کے دوران سینیٹر کامل علی آغا نے کہا کہ موٹروے پر کوئی پوچھنے والا نہیں رہا ٹول ٹیکس بڑھا دیا جاتا ہے 160روپے سے ٹول ٹیکس شروع ہو کر 1ہزار سے اوپر ہو چکا ہے۔ غریب آدمی کا موٹرو ے پر سفر کرنا محال ہو چکا ہے۔
سینیٹر سیف اللہ ابڑو نے کہا کہ موٹر وے پر قائم سروس ایریا میں غریب آدمی چائے تک بھی نہیں خرید سکتا۔ اجلاس کے دوران این ایچ اے حکام نے بتایا کہ اراکین پارلیمنٹ کو آئندہ سے موٹروے ایم 2 پر بنا ٹول ٹیکس ادائیگی کے سفر کرنے کی سہولت دوبارہ سے فراہم کر دی گئی ہے۔

More

Related news

Leave a Reply

Close